15

فیسکو جھنگ سرکل نے ماہ دسمبر کے دوران بجلی چوروں کے خلاف گرینڈ آپریشن کریک ڈاؤن کے دوران 104بجلی چور پکڑ لئے ،87افراد کے خلاف مختلف تھانوں میں مقدمات درج ، 28لاکھ روپے سے زائد جرمانہ وصول


جھنگ ( فراز نیوز،مانیٹرنگ ڈیسک ): فیصل آباد الیکٹرک سپلائی کمپنی جھنگ سرکل نے ماہ دسمبر کے دوران بجلی چوروں کے خلاف گرینڈ آپریشن کریک ڈاؤن کے دوران 104بجلی چور پکڑ لئے جبکہ 87افراد کے خلاف مختلف تھانوں میں مقدمات درج کروانے سمیت ڈیٹیکشن بلوں کی مد میں 28لاکھ روپے سے زائد جرمانہ بھی وصول کر لیا گیا ہے نیز مزید بجلی چوروں کے خلاف کاروائی جاری ہے۔سپرنٹنڈنگ انجینئر فیسکو جھنگ مہر نذر محمد ڈب نے منگل کے روز ایک ملاقات کے دوران بتایاکہ فیسکو جھنگ کی جھنگ ون ،ٹوبہ ٹیک سنگھ،گوجرہ،جھنگ ٹو،بھکر ،سلطان باہو،کمالیہ اور دریا خان ڈویژنوں کی ٹاسک فورسز نے کل 104بجلی چوروں کوپکڑلیاجن کو 184329یونٹس کی مد میں 28لاکھ 10ہزار 2سو چھیالیس روپے پرمشتمل جرمانے عائد کئے گئے جن میں سے 15لاکھ 15ہزار ایک سو بائیس روپے محکمہ کو جمع کرادئیے گئے جبکہ قانونی کارروائی کیلئے 87صارفین کے خلاف مقدما ت کا اندراج بھی کرادیا گیا ہے۔انہوں نے کہا کہ بجلی چور جہاں عوام کے ساتھ دشمنی کر رہے ہیں وہیں وہ قومی خزانہ کو نقصان پہنچا کر ملکی معیشت سے بھی دشمنی سر انجام دے رہے ہیں جنہیں کسی صورت معاف نہ کیا جا سکتا ہے۔
انہوں نے صارفین سے اپیل کی کہ وہ ذمہ دار شہری ہونے کا ثبوت دیں اوراپنے گردونواح میں ہونے والی بجلی چوری کی اطلاع فوری طور اپنی متعلقہ سب ڈویژن کو دیں تاکہ بجلی چور صارفین کے خلاف فوری کارروائی کی جاسکے کیونکہ بجلی چورقومی مجرم ہے اورآپ کے حصے کی بجلی چوری کر اور آپ کے بلوں میں اضافے کا سبب بن رہا ہے۔ انہوں نے کہا کہ بجلی چوری جیسے مکروہ قومی جرم کی سرکوبی کیلئے اپنا بھرپور کردار ادا کریں اورفیسکو ٹیموں کا ساتھ دیں تاکہ ملک سے اس جرم کا خاتمہ ہوسکے ۔ انہوں نے بتایاکہ فیصل آباد الیکٹرک سپلائی کمپنی جھنگ سرکل کے دیگر علاقوں میں گھریلو ، کمرشل اور انڈسٹریل سطح پر بجلی چوروں کے خلاف فوری سخت ترین آپریشن کریک ڈاؤن شروع کر رہی ہے جبکہ عوام الناس سے بھی اپیل کی گئی ہے کہ وہ بجلی چوروں کی نشاندہی کیلئے فوری طور پر فیسکو کے حکام یا فری ہیلپ لائن 0800-84338 پررابطہ کریں تاکہ بجلی چوروں کو اس مکروہ جرم سے روکنے کیلئے بروقت اقدامات کو یقینی بنایا جا سکے ۔ انہوں نے کہا کہ صارفین اور عوام کے تعاون کے بغیر بجلی چوری کے مرتکب قومی مجرموں سے نمٹنا ممکن نہیں ۔ انہوں نے بتایاکہ اگرچہ بجلی چوروں اور فیسکو کا متعلقہ میٹریل چوری کرنے والوں کے خلاف انتظامیہ و پولیس کی مدد بھی حاصل کی جارہی ہے لیکن صارفین کی مدد کے بغیر اہداف کا حصول انتہائی مشکل ہے۔ انہوں نے کہاکہ فیسکو کی سرکاری املاک قومی اثاثہ ہے جس کی حفاظت عوام کی مدد سے یقینی بنائی جا سکتی ہے ۔ انہو ں نے فیسکو کے آپریشن ڈیپارٹمنٹ کے افسران کو بھی ہدایت کی کہ وہ کورٹ کیسز کا جائزہ لیں اور جو کیسز آؤٹ آف کورٹ طے ہو سکتے ہیں ان کو باہمی تصفیہ سے حل کیاجائے ۔انہوں نے واضح کیا کہ بجلی چوری جیسے مکروہ جرم میں ملوث فیسکو کے اہلکاروں کے خلاف بھی ایف آئی آر درج کروائی جائے گی اور انہیں نوکری سے برخاست کردیا جائے گ

اس خبر پر اپنی رائے کا اظہار کریں

اپنا تبصرہ بھیجیں