9

ڈویژنل کمشنر آصف اقبال چوہدری نے ہدایت کی ہے کہ ڈویژن کے چاروں اضلاع میں موسم سرگرما کے آغاز پر ممکنہ سموگ کی روک تھام کے لئے تمام محکمے مربوط کوششیں کریں اس ضمن میں دھواں چھوڑنے والی گاڑیوں اورفصلوں کی باقیات کو آگ لگانے پرپابندی عملدرآمد پر یقینی بنایا جائے

فیصل آباد(فراز نیوز ،مانیٹرنگ ڈیسک)۔انہوں نے یہ ہدایت ایک اجلاس کی صدارت کرتے ہوئے جاری کی جس میں سموگ کی روک تھام کے حوالے سے امورزیربحث آئے۔ایڈیشنل کمشنر خادم حسین جیلانی،ایڈیشنل ڈپٹی کمشنرجنرل/سیکرٹری آر ٹی اے مشتاق حسین نائچ،ڈائریکٹر جنرل پی ایچ اے چوہدری محمد آصف،قائمقام ڈی جی ایف ڈی انجینئر عامر عزیز،ڈپٹی ڈائریکٹر ماحولیات شوکت حیات،ڈائریکٹر ہیلتھ سروسز ڈاکٹرریاض چدھڑ،ڈائریکٹر زراعت چوہدری عبدالحمید،ڈائریکٹر سوشل ویلفےئر محمد شاہدرانا،سی ای او ایجوکیشن علی احمد سیان،ڈائریکٹر لیبرملک منور حسین اعوان،ڈپٹی ڈائریکٹر ہاؤسنگ محمد سعید،ریسکیو1122،پنجاب پولیس،ٹریفک پولیس اوردیگر محکموں کے افسران کے علاوہ جھنگ،ٹوبہ ٹیک سنگھ اور چنیوٹ کے ڈپٹی کمشنرز ویڈیو لنک کانفرنس کے ذریعے اجلاس میں شریک تھے۔ڈویژنل کمشنر نے سیکرٹری آر ٹی اے اور ٹریفک پولیس کو ہدایت کی کہ دھواں چھوڑنے والی گاڑیوں کوبند کرنے کی مہم فوری شروع کی جائے اور گاڑی کے انجن کی فٹنس کی تسلی تک انہیں تھانوں میں بند رکھیں۔انہوں نے کہا کہ ٹرانسپورٹ اڈوں سمیت اہم شاہرات اورعوامی مقامات پر دھواں چھوڑنے والی گاڑیوں کے خلاف کریک ڈاؤن سے متعلق بینرز بھی آویزاں ہونے چاہیں۔انہوں نے ڈائریکٹر زراعت سے کہا کہ وہ کسانوں کو فصلوں کی باقیات نہ جلانے کے بارے میں وسیع آگاہی مہم جاری رکھیں اورانہیں حکومت پنجاب کی طرف سے دفعہ 144کے نفاذ کے بارے میں بھی آگاہ کریں تاکہ خلاف ورزی نہ ہونے پائے۔انہوں نے کہا کہ 20،اکتوبر سے زگ زیگ ٹیکنالوجی کے تحت بھٹے لگانے کے عمل کو پروان چڑھائیں۔اس سلسلے میں بھٹہ خشت ایسوسی ایشنز سے میٹنگز کرکے انہیں آگاہ کیا جائے اور مقررہ تاریخ کے بعد سابقہ ڈیزائن پر لگے ہوئے اینٹوں کے بھٹے نہیں چلنے چاہیں۔کمشنر نے تعلیمی اداروں میں سموگ کی روک تھام کیلئے آگاہی لیکچرز کااہتمام کرنے کی ضرورت پر زور دیتے ہوئے تمام متعلقہ محکموں کو ماحولیاتی آلودگی کے خاتمہ کے لئے شجرکاری مہم کو تیز کرکے مطلوبہ اہداف جلدحاصل کرنے کی تاکید کی۔انہوں نے سرکاری ونجی ہسپتالوں میں ہسپتال ویسٹ کو تلف کرنے کے عمل کو چیک کرنے کی بھی ہدایت کی اور کہا کہ شہریوں کوسموگ کے مضر صحت اثرات کے دوران احتیاطی تدابیر اختیار کرنے کے بارے میں آگاہی کے لئے بھی اقدامات کریں۔انہوں نے فیکڑیوں وکارخانوں کے بوائلرز سے اٹھنے والے دھواں کی روک تھام کے لئے محکمہ ماحولیات،لیبر اور انڈسٹریز کو مشترکہ طور پر اقدامات کرنے کی ہدایت کی۔انہوں نے کہا کہ تمام متعلقہ محکمے سموگ پر قابو پانے کے لئے اپنے ذمہ ٹاسک کو ذمہ داری سے انجام دیں۔اس سلسلے میں ان کی کارروائیوں کے نتائج نظر آنے چاہیں۔اجلاس کے دوران ڈپٹی کمشنرز نے اپنے اضلاع میں سموگ کی روک تھام کے لئے کئے جانے والے اقدامات سے آگاہ کیاجبکہ مختلف محکموں کے افسران نے بتایا کہ سموگ کی روک تھام کے لئے دھواں چھوڑنے والی گاڑیوں،فیکٹریزوکارخانوں،اینٹوں کے بھٹوں کے خلاف کارروائی کا سلسلہ جاری ہے۔

اس خبر پر اپنی رائے کا اظہار کریں

اپنا تبصرہ بھیجیں