6

سپریم کورٹ آف پاکستان کے احکامات پر ضلعی انتظامیہ نے غیر قانونی اور غیر تکنیکی چنگ چی رکشہ جات کے خلاف کریک ڈاؤن کے لئے حکمت عملی تیار کر لی

فیصل آباد ( فراز نیوز ،مانیٹرنگ ڈیسک ) ہے لہذا ایسے چنگ چی رکشہ جات کے مالکان قانونی تقاضوں کو پورا کریں بصورت دیگر انہیں سڑکوں پر چلنے کی اجازت نہیں دی جائے گی ۔ اس امر کا فیصلہ ایک اجلاس کے دوران کیا گیا جو ڈپٹی کمشنر سید احمد فواد کی ہدایت پر ایڈیشنل ڈپٹی کمشنر ( جنرل ) / سیکرٹری آرٹی اے مشتاق حسین نائچ کی زیر صدارت منعقد ہوا جس میں ایکسائز اینڈ ٹیکیشن آفیسر ‘ ڈی ایس پی ٹریفک عمران شریف ‘ موٹر وہیکل ایگزامینر طاہر محمود ‘ میونسپل آفیسر خالد جاوید ‘ سپرنٹنڈنٹ آر ٹی اے عبدالرحمن و دیگر افسران نے شرکت کی ۔ اجلاس میں بتایا گیا کہ چنگ چی رکشہ جات کے مالکان / ڈرائیور سے بار بار کہا گیا ہے کہ وہ اس ٹرانسپورٹ کو قانونی دائرے میں لائیں لیکن سپریم کورٹ کے احکامات کی پابندی نہیں کی جارہی ہے جس پر حتمی طور پر غیر قانونی و غیر تکنیکی رکشہ جات کے خلاف کریک ڈاؤن کا فیصلہ کر لیا گیا ہے ۔اس موقع پر بتایا گیا کہ نہ صرف ایسے غیر قانونی چنگ چی رکشاؤں کے خلاف قانونی کارروائی کی جائے گی بلکہ ایسے رکشہ جات کی باڈیز تیار کرنے والی غیر مجاز ورکشاپ کے خلاف بھی اپریشن کیا جائے گا ۔ اجلاس کو بتایا گیا کہ بیشتر چنگ چی رکشہ جات محکمہ ایکسائز میں بطور موٹر سائیکل رجسٹرڈ ہیں جو کہ رکشاؤں کی باڈی کے ساتھ نہیں لگائے جا سکتے اس ضمن میں بطور چنگ چی رجسٹرڈ ہونا ضروری ہے جبکہ غیر مجاز ورکشاپس فنی و تکنیکی تقاضوں کے بغیر ان رکشاؤں کی باڈیز تیار کر رہی ہیں جن کے چلنے سے حادثات کے زیادہ خطرات موجود ہوتے ہیں ۔ اجلاس کے دوران یہ بھی فیصلہ کیا گیا کہ کریک ڈاؤن کے دوران چنگ چی رکشہ جات کی رجسٹریشن ‘ باڈیز کی تکنیکی و فنی صورتحال اور ڈرائیور کا لائسنس چیک کیا جائے گا اور مطلوبہ قوانین پر پورا نہ اترنے والے رکشہ جات کو بند کر دیا جائے گا ۔ اس موقع پر واضح کیا گیا کہ گورنمنٹ سے غیر منظور شدہ ورکشاپس چنگ چی رکشہ جات کی باڈیز تیار کرنے سے باز رہیں جبکہ دکاندار / شو روم مالکان غیر مجاز ورکشاپس کی تیار کردہ چنگ چی رکشہ جات کی فروخت کا کاروبار نہیں کر سکیں گے بصورت دیگر وہ قانون کی گرفت میں آئیں گے ۔ اجلاس میں یہ بھی وضاحت کی گئی کہ میونسپل کارپوریشن کی طرف سے چنگ چی رکشہ جات کی باڈیز تیار کرنے والی ورکشاپس کو لائسنس جاری نہیں کیا جائے گا اس مقصد کے لئے سیکرٹری آر ٹی آے کے آفس سے رابطہ کیا جائے۔ صدر اجلاس نے غیر قانونی / غیر تکنیکی چنگ چی رکشہ جات کے خلاف کریک ڈاؤن کے لئے تمام متعلقہ محکموں کو مربوط حکمت عملی اختیار کرنے کی تاکید کی اور کہا کہ ایسے رکشہ جات کے مالکان کو کریک ڈاؤن سے متعلق قبل از وقت بخوبی آگاہ کر دیا جائے تاکہ قانون شکنی سے باز رہیں ۔

اس خبر پر اپنی رائے کا اظہار کریں

اپنا تبصرہ بھیجیں