14

ضلع میں 15سے 27،اکتوبر تک جاری رہنے والی انسداد خسرہ مہم کے دوران 6ماہ سے 7سال تک کی عمر کے 11لاکھ 68ہزار300بچوں کو خسرہ سے بچاؤ کے ٹیکے لگائے جائیں گے جس کے لئے محکمہ صحت کی 1033ٹیموں کے علاوہ 21ہزار 264سوشل موبلائزرز کی خدمات بھی حاصل کی جائیں گی۔ڈپٹی کمشنر سید احمد فواد نے گورنمنٹ جنرل ہسپتال سمن آبادمیں انسداد خسرہ کی مہم کا افتتاح کیا۔

فیصل آباد(فراز نیوز،مانیٹرنگ ڈیسک)ضلع میں 15سے 27،اکتوبر تک جاری رہنے والی انسداد خسرہ مہم کے دوران 6ماہ سے 7سال تک کی عمر کے 11لاکھ 68ہزار300بچوں کو خسرہ سے بچاؤ کے ٹیکے لگائے جائیں گے جس کے لئے محکمہ صحت کی 1033ٹیموں کے علاوہ 21ہزار 264سوشل موبلائزرز کی خدمات بھی حاصل کی جائیں گی۔ڈپٹی کمشنر سید احمد فواد نے گورنمنٹ جنرل ہسپتال سمن آبادمیں انسداد خسرہ کی مہم کا افتتاح کیا۔اس موقع پر بچوں کو حفاظتی ٹیکے اوران کی انگلیوں پر نشانات لگائے گئے۔سی ای او ہیلتھ ڈاکٹر مشتاق سپرا،ڈسٹرکٹ ہیلتھ آفیسر ڈاکٹر محمد آصف شہزاد،میڈیکل سپرنٹنڈنٹ ڈاکٹر اسفند یار،ڈسٹرکٹ کوآرڈینیٹر وبائی امراض ڈاکٹر بلال احمد اور دیگر ڈاکٹرز بھی موجود تھے۔ڈپٹی کمشنر سید احمد فواد نے کہا کہ خسرہ کی بیماری پرقابو پانے کیلئے مہم انتہائی اہمیت کی حامل ہے لہذا والدین محکمہ صحت کی ٹیموں سے تعاون کریں اور اپنے 6ماہ سے 7سال تک کی عمر کے بچوں کو خسرہ سے بچاؤ کا اضافی ٹیکہ ضرور لگوائیں۔انہوں نے کہا کہ مہم کے دوران والدین کی موثر آگاہی کا سلسلہ بھی جاری رکھاجائے جس کے لئے تشہیر کے تمام ترذرائع بروئے کار لائیں۔انہوں نے محکمہ صحت کے افسران سے کہا کہ مہم کے سو فیصد اہداف کے حصول کو یقینی بنایا جائے اس ضمن میں ٹیموں کی کارکردگی مسلسل چیک کی جائے۔انہوں نے کہا کہ مہم پر مائیکروپلان کے مطابق عملدرآمد کریں جس میں غفلت کی کوئی گنجائش نہیں۔ڈپٹی کمشنر نے کہا کہ مہم کی کڑی مانیٹرنگ کی جائے گی اور وہ بھی مہم پر عملدرآمد کا باقاعدگی سے جائزہ لیں گے اس ضمن میں کسی جگہ کوتاہی پائی گئی تو محکمہ صحت کے افسران ذمہ دار ہونگے ۔سی ای او ہیلتھ نے بتایا کہ ضلع بھر میں انسداد خسرہ مہم کی مکمل نگرانی کرکے مطلوبہ اہداف حاصل کئے جائیں گے۔ڈسٹرکٹ ہیلتھ آفیسر نے بتایا کہ ویکسین کے تحفظ سمیت تمام تر ضروری انتظامات کے ساتھ انسداد خسرہ مہم شروع کی جارہی ہے۔انہوں نے بتایا کہ مہم کے دوران 721آؤٹ ریچ ٹیمیں ضلع بھر کے سرکاری ونجی تعلیمی اداروں میں 7سال تک کی عمر کے بچوں کو ٹیکے جبکہ 312ٹیمیںیونین کونسلز میں موجود رہ کر ویکسینشین کریں گی۔انہوں نے بتایا کہ سٹاف کی ٹریننگ کا عمل مکمل کرلیا گیا ہے۔

اس خبر پر اپنی رائے کا اظہار کریں

اپنا تبصرہ بھیجیں