16

غیر قانونی پرائیویٹ ہاؤسنگ سکیمیں سیل کر دی گئی ہیں عوام کو سہولیات فراہم کرنے کے بغیر چھینی گئی پائی پائی وصول کی جائے گی اور ہونے والی کرپشن کے بارے میں ان کے کیس انوسٹی گیشن ایجنسیوں کو بجوائے جا رہے ہیں

فیصل آباد (فراز نیوز،مانیٹرنگ ڈیسک ) ڈاکٹر اسد معظم چیئرمین ایف ڈی اے کا کہنا ہے کہ غیر قانونی پرائیویٹ ہاؤسنگ سکیمیں سیل کر دی گئی ہیں عوام کو سہولیات فراہم کرنے کے بغیر چھینی گئی پائی پائی وصول کی جائے گی اور ہونے والی کرپشن کے بارے میں ان کے کیس انوسٹی گیشن ایجنسیوں کو بجوائے جا رہے ہیں ۔ انہوں نے یہ بات عوام کے ایک وفد سے بات چیت کے دوران کہی۔ان کی شکایات سننتے ہوئے ایف ڈی اے کے متعلقہ آفیسران کو ہدایات بھی جاری کیں۔ان کا کہنا تھا کہ سابقہ دور حکومت میں مختلف قبضہ مافیا گروپ نے نا صرف حکومت کی زمینوں پر قبضہ کیا بلکہ غریب کسانوں کی زرعی زمین کو بھی اوچھے ہتھکنڈوں سے حاصل کر کے ان پر غیر قانونی ہاؤسنگ سکیمیں بنائیں اور پیری اربن اور زرعی زمینوں پر قانون کی سراسر خلاف ورزی کرتے ہوئے بے دریغ پرائیویٹ سکیموں کی آڑھ میں لوگوں کے خون پسینے کی کمائی کو ہڑپ کیا۔لہٰذا ان خونخوار درندوں کے خلاف گھیرا تنگ کر دیا جائے گا اور نہ صرف ایسے پرائیویٹ ہاؤسنگ کالونیوں کے مالکان بلکہ ان کی پشت پناہی کرنے والے اور سہولت کاروں کے خلاف بھی کاروائی ہو گی
Back to Conversion Tool

اس خبر پر اپنی رائے کا اظہار کریں

اپنا تبصرہ بھیجیں